ٹڈی دل کا حملہ ہو نے کی صورت میں کاشتکاروں کے لئے ہدایات

ج کل ٹڈی دل نے بلوچستان اور سندھ کے کاشتکاروں کی نیندیں حرام کی ہوئی ہیں۔ ایگری اخبار سے وابسطہ ضلع رحیم یار خاں کے کاشتکاروں کے مطابق ٹڈی دل کے جھنڈ سندھ اور پنجاب کی سرحد پر بھی نظر آئے ہیں جو پنجاب کی کپاس کے لئے خطرہ بن سکتے ہیں۔

ویسے تو حکومت پاکستان کا محکمہ پلانٹ پروٹیکشن ٹڈی دل کو کنٹرول کرنے کے لئے ہوائی جہازوں سے سپرے کئے جا رہا ہے لیکن ٹڈی دل نے اتنے زیادہ محاذ کھولے ہوئے ہیں کہ ہر جگہ سپرے کرنے میں دقت پیش آ رہی ہے۔

سوال یہ ہے کہ اگر خدانخواستہ ٹڈی دل آپ کی فصل پر حملہ آور ہو جائے تو آپ زیادہ سے زیادہ کیا کر سکتے ہیں؟

پلانٹ پروٹیکشن آفیسر فرحان سومرو کے مطابق ٹڈی دل کو شور شرابا کر کے بھگایا جا سکتا ہے۔ اس لئے بہتر یہ ہے کہ آپ حفظ ماتقدم کے طور پر خالی پیپوں یا پٹاس والے پٹاخوں کا بندوبست کر کے رکھیں۔ جیسے ہی ٹڈی دل آپ کی فصل پر حملہ آور ہو، گھر کے تمام افراد کھیت میں پہنچ کر ڈنڈوں کے ساتھ زور زور سے پیپے کھڑکانا شروع کر دیں۔ یا پھر پٹاس کے پٹاخے چلانا شروع کر دیں۔ اس طرح اول تو ٹڈی دل آپ کی فصل پر بیٹھے گی ہی نہیں لیکن اگر بیٹھ بھی جائے تو شور شرابے کی وجہ سے فوراََ اڑ کر آگے چلی جائے گی۔

ٹڈی دل آندھی کی طرح آتی ہوئی نظر آتی ہے اور بڑے بڑے لشکروں کی صورت میں حملہ کرتی ہے۔ اس لئے جب تک پورے کا پورا لشکر گزر نہ جائے آپ کو کھڑکا یا شور شرابہ کرتے رہنا پڑے گا۔

دوسری اہم بات یہ ہے کہ ٹڈی دل صرف دن کو ہی فصلوں وغیرہ کا نقصان کرتی ہے۔رات کو اگر یہ آ بھی جائے تو یہ فصلوں کا نقصان نہیں کرتی۔ اس لئے آپ بھی ٹڈی دل کی طرح رات آرام سے سو سکتے ہیں لیکن صبح صادق کے وقت جیسے ہی اندھیرا چھٹنا شروع ہو آپ کو چوکنا رہنا پڑے گا۔

ٹڈی دل نے پاکستان میں کوئی 25 سال بعد حملہ کیا ہے۔ حملے کی وجہ ٹڈی دل کو اپنی افزائش نسل اور نشوونما کے لئے مناسب ماحول میسر آنا ہے۔ ٹڈی دل ریتلے علاقوں میں انڈے بچے دیتی ہے۔ خاص طور پر جب بارش ہونے کی وجہ سے ہوا میں نمی کی مقدار بڑھ جائے اور ٹڈی دل کو کھانے کے لئے سبزہ بھی میسر آ جائے۔

کوشش کی جا رہی ہے کہ مون سون کی بارشوں سے پہلے ہی اسے سپرے کر کے مار دیا جائے۔ ورنہ مون سون کی بارشوں میں اس کی تعداد بڑھنے کے امکانات کو رد نہیں کیا جا سکتا۔

واضح رہے کہ اس کو مارنے کے لئے فپرونل کا زہر سپرے کیا جاتا ہے۔ اور سپرے کے 2 گھنٹے بعد ٹڈی دل مرنا شروع ہو جاتے ہیں۔

دَل دراصل لشکر کو کہتے ہیں۔ چونکہ یہ ٹڈی لشکروں کی صورت میں حملہ کرتی ہے اس لئے اسے ٹڈی دَل کہا جاتا ہے۔

تحریر

ڈاکٹر شوکت علی
ماہر توسیع زراعت، فیصل آباد

بشکریہ

فرحان سومرو 
پلانٹ پروٹیکشن آفیسر، محکمہ پیسٹ وارننگ اینڈ کوالٹی کنٹرول، پنجاب

جواب دیجئے